جیسے خوشیوں میں غم نہیں ہوتے

فرح اقبال

جیسے خوشیوں میں غم نہیں ہوتے

فرح اقبال

MORE BYفرح اقبال

    جیسے خوشیوں میں غم نہیں ہوتے

    آگ پانی بہم نہیں ہوتے

    مدتوں ہم قریب رہتے ہیں

    فاصلے پھر بھی کم نہیں ہوتے

    زندگی بھر کے ساتھ میں اکثر

    ہم سفر ہم قدم نہیں ہوتے

    سانحے دل پہ جو گزرتے ہیں

    سب کے سب تو رقم نہیں ہوتے

    پوجا ہوتی ہے زندگی بھر کی

    چار دن کے صنم نہیں ہوتے

    جو کبھی مجھ پہ دوستوں کے تھے

    اب وہ لطف و کرم نہیں ہوتے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY