جلا کے آنکھیں سیاہ شب کو کھنگالنا ہے

معین شاداب

جلا کے آنکھیں سیاہ شب کو کھنگالنا ہے

معین شاداب

MORE BYمعین شاداب

    جلا کے آنکھیں سیاہ شب کو کھنگالنا ہے

    اسی اندھیرے سے ہم کو سورج نکالنا ہے

    جو باقی چیزیں ہیں وہ تو میں سب سنبھال لوں گا

    تمہیں یہ کرنا ہے صرف مجھ کو سنبھالنا ہے

    شکست جس کا نصیب ہوگی کچھ اس کا سوچو

    تمہارا کیا ہے تمہیں تو سکہ اچھالنا ہے

    وہ سنگ دل ہے مگر اسے موم کر رہا ہوں

    انہیں چٹانوں سے مجھ کو دریا نکالنا ہے

    وہی گلی جس کی ہم کبھی خاک چھانتے تھے

    ستم تو یہ ہے اسی پہ اب خاک ڈالنا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY