جذب ہوتا جا رہا ہے دل میں درد لا علاج

ابھنندن پانڈے

جذب ہوتا جا رہا ہے دل میں درد لا علاج

ابھنندن پانڈے

MORE BY ابھنندن پانڈے

    جذب ہوتا جا رہا ہے دل میں درد لا علاج

    کیا اسی مرہم سے ہونا طے ہے دنیا کا علاج

    تھی یہی امید بھی اور چارہ گر نے بھی کہا

    آپ کب کے مر چکے ہیں آپ کا کیسا علاج

    دل کو نامنظور تھی تصویر سی جھوٹی دوا

    طے ہوا ترک تعلق ہجر کا پہلا علاج

    خودکشی کا فیصلہ یہ سوچ کر ہم نے کیا

    کون کرتا زندگی کا موت سے اچھا علاج

    المدد اے رقص وحشت آج مر جائیں گے ہم

    اے جنوں اس بے سبب تنہائی کے تنہا علاج

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY