جھوٹی امید کی انگلی کو پکڑنا چھوڑو

سلمان اختر

جھوٹی امید کی انگلی کو پکڑنا چھوڑو

سلمان اختر

MORE BYسلمان اختر

    جھوٹی امید کی انگلی کو پکڑنا چھوڑو

    درد سے بات کرو درد سے لڑنا چھوڑو

    جو پڑوسی ہیں وہ سب اپنے محلے کے ہیں

    کام آئیں گے یہ سب ان سے جھگڑنا چھوڑو

    بے سبب دیتے ہو کیوں اپنی ذہانت کا ثبوت

    ہیرے موتی کو ہر اک بات میں جڑنا چھوڑو

    چاند سورج کی طرح تم بھی ہو قدرت کا کھیل

    جیسے ہو ویسے رہو بننا بگڑنا چھوڑو

    خواب کا راز فقط رات کے سینے میں ہے

    دن میں تعبیر کی تتلی کو پکڑنا چھوڑو

    مآخذ :
    • کتاب : Soch Samajh (Pg. 29)
    • Author : Salman Akhtar
    • مطبع : Star Publishers Pvt.Ltd, N. Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY