جینے والے قضا سے ڈرتے ہیں

شکیل بدایونی

جینے والے قضا سے ڈرتے ہیں

شکیل بدایونی

MORE BY شکیل بدایونی

    جینے والے قضا سے ڈرتے ہیں

    زہر پی کر دوا سے ڈرتے ہیں

    زاہدوں کو کسی کا خوف نہیں

    صرف کالی گھٹا سے ڈرتے ہیں

    آپ جو کچھ کہیں ہمیں منظور

    نیک بندے خدا سے ڈرتے ہیں

    دشمنوں کو ستم کا خوف نہیں

    دوستوں کی وفا سے ڈرتے ہیں

    عزم و ہمت کے باوجود شکیلؔ

    عشق کی ابتدا سے ڈرتے ہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جینے والے قضا سے ڈرتے ہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY