جیون کی بگیا سے ہم کو کیا سندر سوغات ملی

سوہن راہی

جیون کی بگیا سے ہم کو کیا سندر سوغات ملی

سوہن راہی

MORE BYسوہن راہی

    جیون کی بگیا سے ہم کو کیا سندر سوغات ملی

    پھولوں کا سہرا باندھا تو شعلوں کی بارات ملی

    چاند بھٹکتا دیکھا سب نے میرے شہر کی گلیوں میں

    تنہائی کا بھیس بدل کر یاد تری جس رات ملی

    ہم بھی کتنے خوش قسمت ہیں ہمیں تمہارے آنگن سے

    سورج کی خیرات ملی تو کالی رات بھی ساتھ ملی

    اس کو کوئی کھیل کہیں یا قسمت کا اندھیر کہیں

    جس نے ساری دنیا جیتی اس کو پیار میں مات ملی

    راہے تیرے شعروں میں ہے لمس کنوارے جسموں کا

    پت جھڑ میں بھی تجھ کو کچی کلیوں کی سوغات ملی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY