جس انجمن میں دیکھو بیگانے رہ گئے ہیں

اقبال عظیم

جس انجمن میں دیکھو بیگانے رہ گئے ہیں

اقبال عظیم

MORE BYاقبال عظیم

    جس انجمن میں دیکھو بیگانے رہ گئے ہیں

    گنتی کے لوگ جانے پہچانے رہ گئے ہیں

    کل جن حقیقتوں سے ماحول معتبر تھا

    آج ان حقیقتوں کے افسانے رہ گئے ہیں

    اب غارت چمن میں کیا رہ گیا ہے باقی

    کچھ پیرہن دریدہ دیوانے رہ گئے ہیں

    تاریخ عہد رفتہ بالاختصار یہ ہے

    گلشن جہاں جہاں تھے ویرانے رہ گئے ہیں

    اقبالؔ ڈھونڈھتے ہو تم جن کو محفلوں میں

    ان کی جگہ اب ان کے افسانے رہ گئے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY