جس کو نسبت ہو تمہارے نام سے

مہیش چندر نقش

جس کو نسبت ہو تمہارے نام سے

مہیش چندر نقش

MORE BYمہیش چندر نقش

    جس کو نسبت ہو تمہارے نام سے

    کیوں ڈرے وہ گردش ایام سے

    پھر کوئی آواز آئی کان میں

    پھر کھنک اٹھے فضا میں جام سے

    ان نگاہوں کو نہ جانے کیا ہوا

    جن میں رقصاں تھے نئے پیغام سے

    پھر کسی کی بزم کا آیا خیال

    پھر دھواں اٹھا دل ناکام سے

    کون سمجھے ہم پہ کیا گزری ہے نقشؔ

    دل لرز اٹھتا ہے ذکر شام سے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جس کو نسبت ہو تمہارے نام سے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY