جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا

مجید امجد

جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا

مجید امجد

MORE BY مجید امجد

    جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا

    میں ان سے دور وہ میرے قریب کیا کہنا

    یہ تیرگیٔ مسلسل میں ایک وقفۂ نور

    یہ زندگی کا طلسم عجیب کیا کہنا

    جو تم ہو برق نشیمن تو میں نشیمن برق

    الجھ پڑے ہیں ہمارے نصیب کیا کہنا

    ہجوم رنگ فراواں سہی مگر پھر بھی

    بہار نوحۂ صد عندلیب کیا کہنا

    ہزار قافلۂ زندگی کی تیرہ شبی

    یہ روشنی سی افق کے قریب کیا کہنا

    لرز گئی تری لو میرے ڈگمگانے سے

    چراغ گوشۂ کوئے حبیب کیا کہنا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY