جنوں پسند حریف خرد تو ہم بھی ہیں

رؤف خیر

جنوں پسند حریف خرد تو ہم بھی ہیں

رؤف خیر

MORE BYرؤف خیر

    جنوں پسند حریف خرد تو ہم بھی ہیں

    عدو جو نیک نہیں ہے تو بد تو ہم بھی ہیں

    ہزار صفر سہی اک عدد تو ہم بھی ہیں

    تمہارے ساتھ ازل تا ابد تو ہم بھی ہیں

    اب اتنا ناز سمندر مزاجیوں پہ نہ کر

    کہ اپنے آپ میں اک جزر و مد تو ہم بھی ہیں

    ہمیں قبول کہاں کم سواد کرتے ہیں

    خراب مشغلۂ رد و کد تو ہم بھی ہیں

    ہم اپنے آپ سے آگاہ اس قدر تو نہ تھے

    چلو نشانۂ رشک و حسد تو ہم بھی ہیں

    RECITATIONS

    رؤف خیر

    رؤف خیر

    رؤف خیر

    جنوں پسند حریف خرد تو ہم بھی ہیں رؤف خیر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY