Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

جنوں تلاش میں ہے پا نہ لے بہار مجھے

ناطق گلاوٹھی

جنوں تلاش میں ہے پا نہ لے بہار مجھے

ناطق گلاوٹھی

MORE BYناطق گلاوٹھی

    جنوں تلاش میں ہے پا نہ لے بہار مجھے

    ندیم! اب نہ مرے نام سے پکار مجھے

    سرور بادۂ نا خوردہ رقص بزم حیات

    بہت پسند ہے آئین انتظار مجھے

    پھر آج ہم سفر زندگی کہاں ہوں میں

    یہ کون راہ بھلاتا ہے بار بار مجھے

    زمانہ سازیٔ احباب ابھی نہیں سمجھا

    سمجھ رہا ہوں زمانہ ہے سازگار مجھے

    سقوط نبض خبر ہے سکون خاطر کی

    اب آ چلا ہے اب آ جائے گا قرار مجھے

    گو دوستی نہ سہی دشمنی نباہ تو دی

    ملا نصیب سے دشمن وفا شعار مجھے

    عدم کا زندہ نمونہ ہوں میں یہاں ناطقؔ

    وجود مانگ کے لایا ہے مستعار مجھے

    مأخذ :
    • کتاب : Karwaan-e-Ghazal (Pg. 75)
    • Author : Farooq Argali
    • مطبع : Farid Book Depot (Pvt.) Ltd (2004)
    • اشاعت : 2004

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے