جنوں زیادہ بہت ہوتا عقل کم ہوتی

خلیل مامون

جنوں زیادہ بہت ہوتا عقل کم ہوتی

خلیل مامون

MORE BYخلیل مامون

    جنوں زیادہ بہت ہوتا عقل کم ہوتی

    میں قہقہہ بھی لگاتا تو آنکھ نم ہوتی

    ہزاروں چاند ستارے چمک گئے ہوتے

    کبھی نظر جو تری مائل کرم ہوتی

    نہیں ہے مصلحت غم کو آرزو تری

    ترا جو غم بھی نہ ہوتا تو آنکھ نم ہوتی

    ہر ایک زہر کو تم نے بنا دیا تریاک

    جو تم نہ ہوتے ہر اک سانس میری سم ہوتی

    ٹھہر نہ جاتا اگر میں فراز پر مامونؔ

    تلاش غم بھی مری حاصل عدم ہوتی

    مآخذ :
    • کتاب : Sanson Ke Paar (Pg. 33)
    • Author : Khalil Mamoon
    • مطبع : Educational Publishing House, Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY