جستجو منزل ادراک سے وابستہ ہے

طارق عثمانی

جستجو منزل ادراک سے وابستہ ہے

طارق عثمانی

MORE BYطارق عثمانی

    جستجو منزل ادراک سے وابستہ ہے

    خاک درویش ابھی چاک سے وابستہ ہے

    میری فطرت نہیں میں غیر کے رستے پہ چلوں

    میری نسبت بھی میری ناک سے وابستہ ہے

    وہ جو آئی تھی مرے سائیں کے قدموں کے تلے

    میری ہستی تو اسی خاک سے وابستہ ہے

    تو کبھی روح سے انصاف نہیں کر سکتا

    تیری درویشی تو پوشاک سے وابستہ ہے

    تختۂ دار پہ چڑھ جائے گی سچ کی خاطر

    یہ زباں لہجۂ بے باک سے وابستہ ہے

    ہوش والو کو یہ حاصل نہیں ہوتی ہے میاں

    یہ خوشی دیدۂ نمناک سے وابستہ ہے

    ہم زمیں پر نہیں چلتے کبھی تن کر طارقؔ

    دل یہاں ہے مگر افلاک سے وابستہ ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے