Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کعبۂ رخسار کی تیرے زیارت چاہئے

سعید اللہ شاد

کعبۂ رخسار کی تیرے زیارت چاہئے

سعید اللہ شاد

MORE BYسعید اللہ شاد

    کعبۂ رخسار کی تیرے زیارت چاہئے

    مجھ کو تیرا حوصلہ تیری اجازت چاہئے

    میں ہمیشہ یہ دعا کرتا ہوں اے پروردگار

    میرے بیٹوں کو بھی مجھ جیسی سخاوت چاہئے

    سرد موسم کا سہا جاتا نہیں مجھ سے عذاب

    برف جیسی رات کو تیری حرارت چاہئے

    زندگی کا لطف حاصل اس طرح ہوتا نہیں

    دل میں تیرے جذبۂ صبر و قناعت چاہئے

    پورا یوں ہی شہر قبرستان جیسا ہو گیا

    ظالموں کو اور کتنی اب ہلاکت چاہئے

    کوثر و تسنیم تو ہیں اہل جنت کے لئے

    اے مرے ساقی مجھے جام شہادت چاہئے

    جس کی ہر آواز پر ہر شخص ہم آواز ہو

    آج اپنی قوم کو ایسی قیادت چاہئے

    میں بھی بسنا چاہتا ہوں آپ ہی کے شہر میں

    مجھ کو اس میں گھر بنانے کی اجازت چاہئے

    بات سچ کہنا کوئی آساں نہیں اس دور میں

    لب ہلانے کی سر محفل جسارت چاہئے

    شادؔ کیوں اس کا نمائندہ میں تجھ کو مان لوں

    اس کا لکھا کوئی خط اس کی عبارت چاہئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے