کعبے کا شوق ہے نہ صنم خانہ چاہئے

بیدم شاہ وارثی

کعبے کا شوق ہے نہ صنم خانہ چاہئے

بیدم شاہ وارثی

MORE BYبیدم شاہ وارثی

    کعبے کا شوق ہے نہ صنم خانہ چاہئے

    جانانہ چاہئے در جانانہ چاہئے

    ساغر کی آرزو ہے نہ پیمانہ چاہئے

    بس اک نگاہ مرشد مے خانہ چاہئے

    حاضر ہیں میرے جیب و گریباں کی دھجیاں

    اب اور کیا تجھے دل دیوانہ چاہئے

    عاشق نہ ہو تو حسن کا گھر بے چراغ ہے

    لیلیٰ کو قیس شمع کو پروانہ چاہئے

    پروردۂ کرم سے تو زیبا نہیں حجاب

    مجھ خانہ زاد حسن سے پردا نہ چاہئے

    شکوہ ہے کفر اہل محبت کے واسطے

    ہر اک جفائے دوست پہ شکرانہ چاہئے

    بادہ کشوں کو دیتے ہیں ساغر یہ پوچھ کر

    کس کو زکوٰۃ نرگس مستانہ چاہئے

    بیدمؔ نماز عشق یہی ہے خدا گواہ

    ہر دم تصور رخ جانانہ چاہئے

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے