کاجل اداس ہے تو ہیں بے کل سی چوڑیاں

دعا علی

کاجل اداس ہے تو ہیں بے کل سی چوڑیاں

دعا علی

MORE BY دعا علی

    کاجل اداس ہے تو ہیں بے کل سی چوڑیاں

    تم کو بلا رہی ہیں یہ چنچل سی چوڑیاں

    ساون کی مجھ کو پیاس ہے پیاسی ہوں مثل ریت

    تجھ پر برس رہی ہیں یہ بادل سی چوڑیاں

    کرتی ہیں خوب شور نہ سونے یہ مجھ کو دیں

    دیوانی ہو گئی ہیں یہ پاگل سی چوڑیاں

    دیکھو کھنک رہی ہیں یہ خاموشیوں میں بھی

    آنکھوں میں سج رہی ہیں یہ جل تھل سی چوڑیاں

    پل پل یہ چھو رہی ہیں مرا جسم اور بدن

    کرتی ہیں مجھ کو تنگ یہ سانول سی چوڑیاں

    اے شاہ دل سہاگ نشانی ہماری ہیں

    پیاری ہیں مجھ کو جان سے پرپل سی چوڑیاں

    خوشبو مرے بدن کی چراتی ہیں روز و شب

    دیکھو دعاؔ کمال ہیں صندل سی چوڑیاں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY