کان لگا کے سنتی کیا ہے

رابعہ بصری

کان لگا کے سنتی کیا ہے

رابعہ بصری

MORE BYرابعہ بصری

    کان لگا کے سنتی کیا ہے

    کیا دیوار میں در رکھا ہے

    بیتے کل نے دستک دی ہے

    یادوں کا اک شہر ملا ہے

    کمرے کی دیوار کا گریہ

    ہاں ہاں میں نے آپ سنا ہے

    میری اک کروٹ پر جاگے

    نیند کا وہ کتنا کچا ہے

    روٹی مانگتے بچے کو تو

    کیسے دھکے مار رہا ہے

    سنتے ہیں اک شہزادی نے

    اک درویش کا ساتھ چنا ہے

    کوئی سند درکار نہیں ہے

    کچا پکا جو لکھا ہے

    دھڑکن دھڑکن کرلاتی ہے

    دیکھو میز پہ دکھ رکھا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY