کب کہاں کیا مرے دل دار اٹھا لائیں گے

عطا تراب

کب کہاں کیا مرے دل دار اٹھا لائیں گے

عطا تراب

MORE BYعطا تراب

    کب کہاں کیا مرے دل دار اٹھا لائیں گے

    وصل میں بھی دل بے زار اٹھا لائیں گے

    چاہئے کیا تمہیں تحفے میں بتا دو ورنہ

    ہم تو بازار کے بازار اٹھا لائیں گے

    یوں محبت سے نہ ہم خانہ بدوشوں کو بلا

    اتنے سادہ ہیں کہ گھر بار اٹھا لائیں گے

    ایک مصرعے سے زیادہ تو نہیں بار وجود

    تم پکارو گے تو ہر بار اٹھا لائیں گے

    گر کسی جشن مسرت میں چلے بھی جائیں

    چن کے آنسو ترے غم خوار اٹھا لائیں گے

    کون سا پھول سجے گا ترے جوڑے میں بھلا

    اس شش و پنج میں گلزار اٹھا لائیں گے

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY