کبھی کبھی تو یہ حالت بھی کی محبت نے

افتخار مغل

کبھی کبھی تو یہ حالت بھی کی محبت نے

افتخار مغل

MORE BY افتخار مغل

    کبھی کبھی تو یہ حالت بھی کی محبت نے

    نڈھال کر دیا مجھ کو تری محبت نے

    تری یہ پہلی محبت ہے تجھ کو کیا معلوم

    گھلا دیا مجھے اس آخری محبت نے

    وہ یوں بھی خیر سے سرما کا چاند تھی لیکن

    اسے اجال دیا اور بھی محبت نے

    مجھے خدا نے ادھورا ہی چھوڑنا تھا مگر

    مجھے بنا دیا اک شخص کی محبت نے

    یہ تم جو میرے لیے خواب چھوڑ آئی ہو

    تمہیں جگایا تو ہوگا مری محبت نے

    میں جس کو پہلے پہل دل لگی سمجھتا تھا

    مجھے تو مار دیا اس نئی محبت نے

    یہ اپنے اپنے نصیبوں کی بات ہے ورنہ

    کسی کو میرؔ بنایا اسی محبت نے

    یہ جسم و جان یہ نام و نمود حسب و نسب

    یہ سارے وہم تھے عزت تو دی محبت نے

    محبت اور عبادت میں فرق تو ہے ناں

    سو چھین لی ہے تری دوستی محبت نے

    مآخذ:

    • کتاب : Pakistani Adab (Pg. 335)
    • Author : Dr. Rashid Amjad
    • مطبع : Pakistan Academy of Letters, Islambad, Pakistan (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY