کبھی کبھی یوں بھی ہم نے اپنے جی کو بہلایا ہے

ندا فاضلی

کبھی کبھی یوں بھی ہم نے اپنے جی کو بہلایا ہے

ندا فاضلی

MORE BY ندا فاضلی

    کبھی کبھی یوں بھی ہم نے اپنے جی کو بہلایا ہے

    جن باتوں کو خود نہیں سمجھے اوروں کو سمجھایا ہے

    ہم سے پوچھو عزت والوں کی عزت کا حال کبھی

    ہم نے بھی اک شہر میں رہ کر تھوڑا نام کمایا ہے

    اس کو بھولے برسوں گزرے لیکن آج نہ جانے کیوں

    آنگن میں ہنستے بچوں کو بے کارن دھمکایا ہے

    اس بستی سے چھٹ کر یوں تو ہر چہرہ کو یاد کیا

    جس سے تھوڑی سی ان بن تھی وہ اکثر یاد آیا ہے

    کوئی ملا تو ہاتھ ملایا کہیں گئے تو باتیں کیں

    گھر سے باہر جب بھی نکلے دن بھر بوجھ اٹھایا ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    جگجیت سنگھ

    جگجیت سنگھ

    RECITATIONS

    جگجیت سنگھ

    جگجیت سنگھ

    جگجیت سنگھ

    کبھی کبھی یوں بھی ہم نے اپنے جی کو بہلایا ہے جگجیت سنگھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites