کبھی کسک جدائی کی کبھی مہک وصال کی

اقبال اشہر

کبھی کسک جدائی کی کبھی مہک وصال کی

اقبال اشہر

MORE BY اقبال اشہر

    کبھی کسک جدائی کی کبھی مہک وصال کی

    قدم نہ تھے زمیں پہ جب وہ عمر تھی کمال کی

    کئی دنوں سے فکر کا افق اداس اداس ہے

    نہ جانے کھو گئی کہاں دھنک ترے خیال کی

    رفاقتوں کے وہ نشاں نہ جانے کھو گئے کہاں

    وہ خوشبوؤں کی رہ گزر وہ رتجگوں کی پالکی

    کسی کو کھو کے پا لیا کسی کو پا کے کھو دیا

    نہ انتہا خوشی کی ہے نہ انتہا ملال کی

    وہ روشنی کا خواب تھا مگر وہی سراب تھا

    عروج میں چھپی ہوئی تھی ابتدا زوال کی

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    فہد حسین

    کبھی کسک جدائی کی کبھی مہک وصال کی فہد حسین

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY