کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا

ندا فاضلی

کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا

ندا فاضلی

MORE BY ندا فاضلی

    INTERESTING FACT

    فلم: آہستہ آہستہ ١٩٨١

    کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا

    کہیں زمین کہیں آسماں نہیں ملتا

    تمام شہر میں ایسا نہیں خلوص نہ ہو

    جہاں امید ہو اس کی وہاں نہیں ملتا

    کہاں چراغ جلائیں کہاں گلاب رکھیں

    چھتیں تو ملتی ہیں لیکن مکاں نہیں ملتا

    یہ کیا عذاب ہے سب اپنے آپ میں گم ہیں

    زباں ملی ہے مگر ہم زباں نہیں ملتا

    چراغ جلتے ہی بینائی بجھنے لگتی ہے

    خود اپنے گھر میں ہی گھر کا نشاں نہیں ملتا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    بھوپندر سنگھ

    بھوپندر سنگھ

    نامعلوم

    نامعلوم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY