کبھی سحر تو کبھی شام لے گیا مجھ سے

فرحت عباس شاہ

کبھی سحر تو کبھی شام لے گیا مجھ سے

فرحت عباس شاہ

MORE BY فرحت عباس شاہ

    کبھی سحر تو کبھی شام لے گیا مجھ سے

    تمہارا درد کئی کام لے گیا مجھ سے

    مجھے خبر نہ ہوئی اور زمانہ جاتے ہوئے

    نظر بچا کے ترا نام لے گیا مجھ سے

    اسے زیادہ ضرورت تھی گھر بسانے کی

    وہ آ کے میرے در و بام لے گیا مجھ سے

    بھلا کہاں کوئی جز اس کے ملنے والا تھا

    بس ایک جرأت ناکام لے گیا مجھ سے

    بس ایک لمحے کے سچ جھوٹ کے عوض فرحتؔ

    تمام عمر کا الزام لے گیا مجھ سے

    RECITATIONS

    جاوید نسیم

    جاوید نسیم

    جاوید نسیم

    Kabhi saher kabhi sham le gaya mujhse - Farhat Abbas Shah جاوید نسیم

    مآخذ:

    • کتاب : Beesveen Sadi Ki Behtareen Ishqiya Ghazlen (Pg. 171)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY