کبھی تو بنتے ہوئے اور کبھی بگڑتے ہوئے

امیر امام

کبھی تو بنتے ہوئے اور کبھی بگڑتے ہوئے

امیر امام

MORE BYامیر امام

    کبھی تو بنتے ہوئے اور کبھی بگڑتے ہوئے

    یہ کس کے عکس ہیں تنہائیوں میں پڑتے ہوئے

    عجیب دشت ہے اس میں نہ کوئی پھول نہ خار

    کہاں پہ آ گیا میں تتلیاں پکڑتے ہوئے

    مری فضائیں ہیں اب تک غبار آلودہ

    بکھر گیا تھا وہ کتنا مجھے جکڑتے ہوئے

    جو شام ہوتی ہے ہر روز ہار جاتا ہوں

    میں اپنے جسم کی پرچھائیوں سے لڑتے ہوئے

    یہ اتنی رات گئے آج شور ہے کیسا

    ہوں جسے قبروں پہ پتھر کہیں اکھڑتے ہوئے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    امیر امام

    امیر امام

    RECITATIONS

    امیر امام

    امیر امام

    امیر امام

    کبھی تو بنتے ہوئے اور کبھی بگڑتے ہوئے امیر امام

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY