کچے رنگ اتر جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

مرغوب علی

کچے رنگ اتر جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

مرغوب علی

MORE BYمرغوب علی

    کچے رنگ اتر جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    سارے خواب بکھر جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    ریت کا ڈھیر نظر آتے ہیں شہر کے سارے پختہ گھر

    چیخوں سے دل ڈر جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    تلووں میں سینے کی دھڑکن ہونٹوں پر مدت کی پیاس

    جب ہم ''جان نگر'' جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    بھیگے بھیگے چاند ستارے شبنم رت نیلا آکاش

    اس کے بال سنور جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    کرسی میز کتابیں؟ بستر انجانے سے تکتے ہیں

    دیر سے اپنے گھر جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    ٹوٹی کشتی دور کنارا ذہن میں کچھ گزرے قصے

    ہم جب بیچ بھنور جائیں تو سب کچھ یوں ہی لگتا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Aadhi Raat Ki Shabnam (Pg. 104)
    • Author : Marghoob Ali
    • مطبع : Takhleeqkar Publishers (2001)
    • اشاعت : 2001

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY