کہاں یہ تاب کہ چکھ چکھ کے یا گرا کے پیوں

شاد عظیم آبادی

کہاں یہ تاب کہ چکھ چکھ کے یا گرا کے پیوں

شاد عظیم آبادی

MORE BYشاد عظیم آبادی

    کہاں یہ تاب کہ چکھ چکھ کے یا گرا کے پیوں

    ملے بھرا ہوا ساغر تو ڈگڈگا کے پیوں

    ہزار تلخ ہو پیر مغاں نے جب دی ہے

    خدا نہ کردہ جو میں منہ بنا بنا کے پیوں

    مزا ہے بادہ کشی کا وہیں تو اے ساقی

    پیوں جو اب تو ترے آستاں پہ آ کے پیوں

    بغیر جلوہ دکھائے رہے نہ یہ معشوق

    جو سات پردے کے اندر اسے چھپا کے پیوں

    میں وہ نہیں کہ خود اپنے قدح کی خیر مناؤں

    پیوں تو بزم میں دس پانچ کو پلا کے پیوں

    زمیں پہ جام کو رکھ دے ذرا ٹھہر ساقی

    میں تجھ پہ ہوں لوں تصدق تو پھر اٹھا کے پیوں

    وہ مے کدہ ہے نہ ساقی ہے کچھ نہ پوچھو شادؔ

    میں کس کے گھر میں پیوں کس کے گھر سے لا کے پیوں

    مآخذ
    • کتاب : Dewan-e-shad Azimabadi (Pg. 230)
    • Author : Shad Azimabadi
    • مطبع : Educational Publishing House (2005)
    • اشاعت : 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY