کئی دنوں سے اسے مجھ سے کوئی کام نہیں

حبیب کیفی

کئی دنوں سے اسے مجھ سے کوئی کام نہیں

حبیب کیفی

MORE BYحبیب کیفی

    کئی دنوں سے اسے مجھ سے کوئی کام نہیں

    یہی سبب ہے کہ مجھ سے دعا سلام نہیں

    ابھی سفر میں ہوں چلنا مرا مقدر ہے

    پہنچ گیا ہوں جہاں وہ مرا مقام نہیں

    فضا کثیف کیے جا رہے ہیں لوگ مگر

    لگاتا ان پہ یہاں پر کوئی نظام نہیں

    وہ لوٹنے کا بہانہ بھی ڈھونڈ سکتا ہے

    خیال ہے مرا لیکن خیال خام نہیں

    تمہارے محل کی بنیاد میں ہیں دفن مگر

    کوئی بھی محل میں لیتا ہمارا نام نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY