کیسے سچ سے رہے بے خبر آئنہ

سچن شالنی

کیسے سچ سے رہے بے خبر آئنہ

سچن شالنی

MORE BY سچن شالنی

    کیسے سچ سے رہے بے خبر آئنہ

    آج خوش ہے بہت ٹوٹ کر آئنہ

    ہر طرف بے ضمیری نظر آئے گی

    ہو گیا گر یہ پورا نگر آئنہ

    آئنہ لوگ گھر میں سجاتے ہیں پر

    میں نے کر ڈالا پورا ہی گھر آئنہ

    جھوٹھے چہروں کو سچا بتاتا صدا

    رکھتا انساں سی فطرت اگر آئنہ

    آئنہ کی ہے اک اور خوبی سنو

    سب کو آتا نہیں ہے نظر آئنہ

    لگ نہ جائے کوئی داغ کردار پر

    زندہ رکھتا ہے دل میں یہ ڈر آئنہ

    صرف صورت نہیں جس میں سیرت دکھے

    ایسا بن کر چلے ہم سفر آئنہ

    وہ بدلتے ہیں کردار دن میں کئی

    دیکھتے ہیں جو شام و سحر آئنہ

    مجھ کو دیتے ہیں اب وہ نصیحت سچنؔ

    دیکھ پائے نہ جو عمر بھر آئنہ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY