کلیجہ رہ گیا اس وقت پھٹ کر

پون کمار

کلیجہ رہ گیا اس وقت پھٹ کر

پون کمار

MORE BY پون کمار

    کلیجہ رہ گیا اس وقت پھٹ کر

    کہا جب الوداع اس نے پلٹ کر

    تسلی کس طرح دیتا اسے میں

    میں خود ہی رو پڑا اس سے لپٹ کر

    اکیلا رہ گیا ہوں کارواں میں

    کہاں تک آ گئی تعداد گھٹ کر

    نہ کوئی عکس باقی تھا نہ صورت

    رکھا جو آئنہ میں نے الٹ کر

    پرندہ اور اڑنا چاہتا تھا

    افق ہی رہ گیا خود میں سمٹ کر

    نہ بچ پائیں گے پربت بندشوں کے

    محبت کی ندی نکلی ہے کٹ کر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY