کترا کے زندگی سے گزر جاؤں کیا کروں

نصرت مہدی

کترا کے زندگی سے گزر جاؤں کیا کروں

نصرت مہدی

MORE BY نصرت مہدی

    کترا کے زندگی سے گزر جاؤں کیا کروں

    رسوائیوں کے خوف سے مر جاؤں کیا کروں

    میں کیا کروں کہ تیری انا کو سکوں ملے

    گر جاؤں ٹوٹ جاؤں بکھر جاؤں کیا کروں

    پھر آ کے لگ رہے ہیں پروں پر ہوا کے تیر

    پرواز اپنی روک لوں ڈر جاؤں کیا کروں

    جنگل میں بے امان سی بیٹھی ہوئی ہوں میں

    آواز کس کو دوں میں کدھر جاؤں کیا کروں

    کیا حکم آپ کا ہے مرے واسطے حضور

    جاری سفر رکھوں کہ ٹھہر جاؤں کیا کروں

    کب تک سنوں بہار میں خوشبو کی دستکیں

    کیوں اے غم حیات سنور جاؤں کیا کروں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY