کٹتا ہے وقت کیسے بتا دوں جناب کا

نیازنذر فاطمی

کٹتا ہے وقت کیسے بتا دوں جناب کا

نیازنذر فاطمی

MORE BYنیازنذر فاطمی

    کٹتا ہے وقت کیسے بتا دوں جناب کا

    قصہ سنایا کرتے ہیں عہد شباب کا

    اے مولیٰ تو رحیم ہے یہ جانتا ہوں میں

    رکھا ہے یوں ہی پیچ حساب و کتاب کا

    تم آ گئے خوشی ملی آنسو ٹھہر گئے

    گزرا کٹھن زمانہ مرے اضطراب کا

    تاروں کے درمیان ہے جو امتیاز چاند

    درجہ ہے گلستاں میں وہی تو گلاب کا

    ململ کا استعمال بجا ہے مگر یہ کیا

    چرچا ہے انجمن میں ابھی تک نقاب کا

    اتنی خطا تھی نذرؔ تمہیں سرنگوں نہ تھے

    ڈولا گزر رہا تھا جو عزت مآب کا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے