خاک ہے میرا بدن خاک ہی اس کا ہوگا

فرحت احساس

خاک ہے میرا بدن خاک ہی اس کا ہوگا

فرحت احساس

MORE BYفرحت احساس

    خاک ہے میرا بدن خاک ہی اس کا ہوگا

    دونوں مل جائیں تو کیا زور کا صحرا ہوگا

    پھر مرا جسم مری جاں سے جدا ہے دیکھو

    تم نے ٹانکا جو لگایا تھا وہ کچا ہوگا

    تم کو رونے سے بہت صاف ہوئی ہیں آنکھیں

    جو بھی اب سامنے آئے گا وہ اچھا ہوگا

    روز یہ سوچ کے سوتا ہوں کہ اس رات کے بعد

    اب اگر آنکھ کھلے گی تو سویرا ہوگا

    کیا بدن ہے کہ ٹھہرتا ہی نہیں آنکھوں میں

    بس یہی دیکھتا رہتا ہوں کہ اب کیا ہوگا

    مأخذ :
    • کتاب : mai.n ronaa chaahtaa huu.n (Pg. 68)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY