خال لب آفت جاں تھا مجھے معلوم نہ تھا

بقا اللہ بقاؔ

خال لب آفت جاں تھا مجھے معلوم نہ تھا

بقا اللہ بقاؔ

MORE BY بقا اللہ بقاؔ

    خال لب آفت جاں تھا مجھے معلوم نہ تھا

    دام دانے میں نہاں تھا مجھے معلوم نہ تھا

    خواہش سود تھی سودے میں محبت کے ولے

    سر بہ سر اس میں زیاں تھا مجھے معلوم نہ تھا

    باتوں باتوں میں مرے سر کو کٹا دے گا رقیب

    اس قدر سیف زباں تھا مجھے معلوم نہ تھا

    میں تو آیا تھا بقاؔ باغ میں سن جوش بہار

    پر یہ ہنگام خزاں تھا مجھے معلوم نہ تھا

    مآخذ:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY