خنجر کی طرح بوئے سمن تیز بہت ہے

مجروح سلطانپوری

خنجر کی طرح بوئے سمن تیز بہت ہے

مجروح سلطانپوری

MORE BYمجروح سلطانپوری

    خنجر کی طرح بوئے سمن تیز بہت ہے

    موسم کی ہوا اب کے جنوں خیز بہت ہے

    راس آئے تو ہے چھاؤں بہت برگ و شجر کی

    ہاتھ آئے تو ہر شاخ ثمر ریز بہت ہے

    لوگو مری گل کاری وحشت کا صلہ کیا

    دیوانے کو اک حرف دل آویز بہت ہے

    منعم کی طرح پیر حرم پیتے ہیں وہ جام

    رندوں کو بھی جس جام سے پرہیز بہت ہے

    مصلوب ہوا کوئی سر راہ تمنا

    آواز جرس پچھلے پہر تیز بہت ہے

    مجروحؔ سنے کون تری تلخ نوائی

    گفتار عزیزاں شکرآمیز بہت ہے

    RECITATIONS

    شکیل جمالی

    شکیل جمالی

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    شکیل جمالی

    خنجر کی طرح بوئے سمن تیز بہت ہے شکیل جمالی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY