ختم ان کے کبھی ستم نہ ہوئے

ابھے کمار بیباک

ختم ان کے کبھی ستم نہ ہوئے

ابھے کمار بیباک

MORE BYابھے کمار بیباک

    ختم ان کے کبھی ستم نہ ہوئے

    سر ہمارے اگرچہ خم نہ ہوئے

    تم کوئی شام ایسی بتلاؤ

    جب ہوئے تم اداس ہم نہ ہوئے

    اپنا خالق تو ہے صنم اپنا

    ہم کسی کے مگر صنم نہ ہوئے

    کس کو آنکھیں ملا کے دیکھیں جب

    تیری نظروں میں محترم نہ ہوئے

    اور جینے کا کیا ہنر رکھتے

    کم سے کم ہاتھ تو قلم نہ ہوئے

    کیا ہوا لفظ لفظ جینے سے

    اک عبارت میں جب رقم نہ ہوئے

    لطف ببیاکؔ اس سفر میں کہاں

    جس کی راہوں میں زیر و بم نہ ہوئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY