خزاں بلائے مگر روکے ہیں بہار مجھے

رشمی صبا

خزاں بلائے مگر روکے ہیں بہار مجھے

رشمی صبا

MORE BY رشمی صبا

    خزاں بلائے مگر روکے ہیں بہار مجھے

    میں ٹھہری رت ہوں کبھی آ کے تو گزار مجھے

    میں عکس تھی تو تری دسترس سے باہر تھی

    ہوئی ہوں روپ تو حاصل ہوں اب نکھار مجھے

    میں ڈھل چکی ہوں کسی سانچے میں بہت پہلے

    نہ اور بننے کی کچھ چاک سے اتار مجھے

    نہ جانے کتنے نئے رنگ مجھ میں اگتے ہیں

    وہ ایک لمس بنا دیتا ہے بہار مجھے

    میں ہجرتوں کے کئی دشت پار کر آئی

    اے مجھ سے بچھڑی زمیں اب تو تو پکار مجھے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY