خود آپ اپنی زد میں ستم گر بھی آئے گا

منصور عثمانی

خود آپ اپنی زد میں ستم گر بھی آئے گا

منصور عثمانی

MORE BYمنصور عثمانی

    خود آپ اپنی زد میں ستم گر بھی آئے گا

    تم منتظر رہو کہ یہ منظر بھی آئے گا

    اس ریت کے نگر کو نہ گھبراؤ دیکھ کر

    آگے بڑھو کہ ایک سمندر بھی آئے گا

    خوشبو کا قافلہ یہ بہاروں کا سلسلہ

    پہنچا ہے شہر تک تو مرے گھر بھی آئے گا

    چلتے ہو میرے ساتھ تو اتنا بھی سوچ لو

    راہوں میں میری غم کا سمندر بھی آئے گا

    مقتل کو جا رہا ہوں یہ منصورؔ سوچ کر

    چھینٹا کوئی لہو کا تو ان پر بھی آئے گا

    مأخذ :
    • کتاب : Kashmakash (Pg. 65)
    • Author : Mansoor Usmani
    • مطبع : Najma House, Baradari, Moradabad (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY