خودی کا نشہ چڑھا آپ میں رہا نہ گیا

یگانہ چنگیزی

خودی کا نشہ چڑھا آپ میں رہا نہ گیا

یگانہ چنگیزی

MORE BYیگانہ چنگیزی

    خودی کا نشہ چڑھا آپ میں رہا نہ گیا

    خدا بنے تھے یگانہؔ مگر بنا نہ گیا

    پیام زیر لب ایسا کہ کچھ سنا نہ گیا

    اشارہ پاتے ہی انگڑائی لی رہا نہ گیا

    ہنسی میں وعدۂ فردا کو ٹالنے والو

    لو دیکھ لو وہی کل آج بن کے آ نہ گیا

    گناہ زندہ دلی کہیے یا دل آزاری

    کسی پہ ہنس لیے اتنا کہ پھر ہنسا نہ گیا

    پکارتا رہا کس کس کو ڈوبنے والا

    خدا تھے اتنے مگر کوئی آڑے آ نہ گیا

    کروں تو کس سے کروں درد نارسا کا گلہ

    کہ مجھ کو لے کے دل دوست میں سما نہ گیا

    بتوں کو دیکھ کے سب نے خدا کو پہچانا

    خدا کے گھر تو کوئی بندۂ خدا نہ گیا

    کرشن کا ہوں پجاری علی کا بندہ ہوں

    یگانہؔ شان خدا دیکھ کر رہا نہ گیا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    امانت علی خان

    امانت علی خان

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    خودی کا نشہ چڑھا آپ میں رہا نہ گیا فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY