خوبان فسوں گر سے ہم الجھا نہیں کرتے

منیرؔ  شکوہ آبادی

خوبان فسوں گر سے ہم الجھا نہیں کرتے

منیرؔ  شکوہ آبادی

MORE BYمنیرؔ  شکوہ آبادی

    خوبان فسوں گر سے ہم الجھا نہیں کرتے

    جادو گروں کی زلف میں لٹکا نہیں کرتے

    ڈرتے ہیں کہ نالوں سے قیامت نہ مچا دوں

    اس خوف سے وہ وعدۂ فردا نہیں کرتے

    برباد ہیں لیکن نہیں یاروں سے مکدر

    گو خاک ہیں پر دل کبھی میلا نہیں کرتے

    اقرار شفا کرتے ہیں پر رکھتے ہیں بیمار

    اچھا جو وہ کہتے ہیں کچھ اچھا نہیں کرتے

    سورج ہیں کبھی چاند کبھی شمع کبھی پھول

    کس روز نئے روپ وہ بدلا نہیں کرتے

    دل سے ہوں منیرؔ اپنے میں استاد کا عاشق

    توقیر و رعایت مری کیا کیا نہیں کرتے

    مآخذ:

    • کتاب : Intekhab-e-Kalam Muneer Shikohabadi (Pg. 36)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY