خواب آنکھوں میں نہاں ہے اب بھی

احتشام اختر

خواب آنکھوں میں نہاں ہے اب بھی

احتشام اختر

MORE BYاحتشام اختر

    خواب آنکھوں میں نہاں ہے اب بھی

    بجھ گئی آگ دھواں ہے اب بھی

    وہ مرے پاس نہیں ہے لیکن

    اس کے ہونے کا گماں ہے اب بھی

    کیا بہادر کوئی آیا ہی نہیں

    راہ میں سنگ گراں ہے اب بھی

    کوئی پیاسا ہی نہیں ہے ورنہ

    چشمۂ‌ شوق رواں ہے اب بھی

    گھر کو کاندھے پہ لیے پھرتا ہوں

    مجھ میں یہ تاب و تواں ہے اب بھی

    میں تعلق سے پرے ہوں لیکن

    مجھ سے وابستہ جہاں ہے اب بھی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY