خواب کو دن کی شکستوں کا مداوا نہ سمجھ

ساقی فاروقی

خواب کو دن کی شکستوں کا مداوا نہ سمجھ

ساقی فاروقی

MORE BYساقی فاروقی

    خواب کو دن کی شکستوں کا مداوا نہ سمجھ

    نیند پر تکیہ نہ کر شب کو مسیحا نہ سمجھ

    ہجر کے شہر میں گلزار کہاں ملتے ہیں

    صبح کو دشت سمجھ شام کو ویرانہ سمجھ

    میں کہیں اور کا ٹوٹا ہوا تارا ہوں کوئی

    تو مجھے اپنے ستاروں سے الجھتا نہ سمجھ

    مجھ پہ کھل جا کہ مرے دل میں کوئی پیچ پڑے

    اپنی تنہائی کے اسرار زلیخانہ سمجھ

    راستہ دے کہ محبت میں بدن شامل ہے

    میں فقط روح نہیں ہوں مجھے ہلکا نہ سمجھ

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    خواب کو دن کی شکستوں کا مداوا نہ سمجھ نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY