خوابوں کے آسرے پہ بہت دن جیے ہو تم

سلمان اختر

خوابوں کے آسرے پہ بہت دن جیے ہو تم

سلمان اختر

MORE BYسلمان اختر

    خوابوں کے آسرے پہ بہت دن جیے ہو تم

    شاید یہی سبب ہے کہ تنہا رہے ہو تم

    اپنے سے کوئی بات چھپائی نہیں کبھی

    یہ بھی فریب خود کو بہت دے چکے ہو تم

    پوچھا ہے اپنے آپ سے میں نے ہزار بار

    مجھ کو بتاؤ تو سہی کیا چاہتے ہو تم

    خالی برآمدوں نے مجھے دیکھ کر کہا

    کیا بات ہے اداس سے کچھ لگ رہے ہو تم

    گھر کے لبوں پہ آج تک آیا نہ یہ سوال

    ہو کر کہاں سے آئے ہو کیا تھک گئے ہو تم

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    خوابوں کے آسرے پہ بہت دن جیے ہو تم نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY