خوار و رسوا نہ سر کوچہ و بازار ملے

مخمور سعیدی

خوار و رسوا نہ سر کوچہ و بازار ملے

مخمور سعیدی

MORE BYمخمور سعیدی

    خوار و رسوا نہ سر کوچہ و بازار ملے

    ہے یہی عشق کا اعزاز سر دار ملے

    زندگی سے یہ رہا اپنی ملاقات کا حال

    کسی بیزار سے جیسے کوئی بیزار ملے

    ہم سے پہلے بھی یہ افسانہ بیاں ہوتا تھا

    کتنے غم پھر بھی ہمیں تشنۂ‌ اظہار ملے

    زندگی نے کوئی آئینہ دکھایا جب بھی

    اپنے چہرے پہ ہمیں موت کے آثار ملے

    فکر تعبیر میں نیند اڑ گئی دیوانوں کی

    خواب اپنے ہی ان آنکھوں میں جو بیدار ملے

    مسکراتے ہوئے چہروں پہ نہ جاؤ مخمورؔ

    شاید ان میں بھی کوئی تم سا دل افگار ملے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY