کس طرح بھولے ترے الفاظ بے جا کیا کروں

ارملا مادھو

کس طرح بھولے ترے الفاظ بے جا کیا کروں

ارملا مادھو

MORE BYارملا مادھو

    کس طرح بھولے ترے الفاظ بے جا کیا کروں

    وحشتیں یا حسرتیں جو بھی ہیں لے جا کیا کروں

    دل ہتھیلی پہ رکھا اور ساتھ میں اک خط دیا

    کچھ نہیں باقی بچا ہے کیوں یہ بھیجا کیا کروں

    ہر گھڑی ہلکان رہنا اور نہ سونا رات بھر

    اور جو تنہائی دی تھی وہ بھی ہے جا کیا کروں

    کب تلک چل پائے گی یہ ایک طرفہ زیادتی

    میں بھی جانوں ہوں تغافل جا کہے جا کیا کروں

    مجھ کو سننا ہی نہیں ہے تلخیوں کا فلسفہ

    عمر بھر تو میں نے تنہا غم سہیجا کیا کروں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY