کسی کا خواب کسی کا قیاس ہے دنیا

ذوالفقار عادل

کسی کا خواب کسی کا قیاس ہے دنیا

ذوالفقار عادل

MORE BYذوالفقار عادل

    کسی کا خواب کسی کا قیاس ہے دنیا

    مرے عزیز یہاں کس کے پاس ہے دنیا

    یہ خون اور پسینے کی بو نہیں جاتی

    نہ جانے کس کے بدن کا لباس ہے دنیا

    ہمارے حلق سے اک گھونٹ بھی نہیں اتری

    بس ایک اور ہی دنیا کی پیاس ہے دنیا

    مرے قلم کی سیاہی کا ایک قطرہ ہے

    مری کتاب سے اک اقتباس ہے دنیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY