کسی کے نام کو لکھتے ہوئے مٹاتے ہوئے

رشمی صبا

کسی کے نام کو لکھتے ہوئے مٹاتے ہوئے

رشمی صبا

MORE BY رشمی صبا

    کسی کے نام کو لکھتے ہوئے مٹاتے ہوئے

    تمام رات کٹی خود کو آزماتے ہوئے

    کہا یہ رات نے مجھ سے مجھے سلاتے ہوئے

    تو تھک گئی ہے بہت حال دل سناتے ہوئے

    میں کیوں سمیٹ نہیں پاتی ہوں کبھی اس کو

    بکھر رہا ہے جو ہر پل مجھے سجاتے ہوئے

    یہ چاہتی تھی کہ میں طے کروں سفر اس کا

    جو تھک گیا ہے مرا حوصلہ بڑھاتے ہوئے

    زمانہ لاکھ اسے کوستا رہے پھر بھی

    بہار جنما ہمیشہ خزاں نے جاتے ہوئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY