کسی نے دل کے طاق پر جلا کے رکھ دیا ہمیں

اعتبار ساجد

کسی نے دل کے طاق پر جلا کے رکھ دیا ہمیں

اعتبار ساجد

MORE BYاعتبار ساجد

    کسی نے دل کے طاق پر جلا کے رکھ دیا ہمیں

    مگر ہوائے ہجر نے بجھا کے رکھ دیا ہمیں

    ہزار ہم نے ضبط سے لیا تھا کام کیا کریں

    کسی کے آنسوؤں نے پھر رلا کے رکھ دیا ہمیں

    ہماری شہرتیں خراب اس طرح بھی اس نے کیں

    کہ اپنے آشناؤں سے ملا کے رکھ دیا ہمیں

    ہمیں اس انجمن میں جانے اس نے کیوں بلا لیا

    بلا لیا اور اک طرف بٹھا کے رکھ دیا ہمیں

    فقط ہم ایک دیکھنے کی چیز بن کے رہ گئے

    کسی نے ایسا عشق میں بنا کے رکھ دیا ہمیں

    ہم اعتبارؔ اس کی ہر شکست میں شریک تھے

    مگر بساط سے الگ اٹھا کے رکھ دیا ہمیں

    مأخذ :
    • کتاب : Mujhe Koi Sham Udhar Do (Pg. 88)
    • Author : Aitabar Sajid
    • مطبع : Ilm o Irfan Publishers Lahore (2007,2009)
    • اشاعت : 2007,2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY