کسی تاریک گوشے میں بسر ہوگی ہماری

محمد اظہار الحق

کسی تاریک گوشے میں بسر ہوگی ہماری

محمد اظہار الحق

MORE BYمحمد اظہار الحق

    INTERESTING FACT

    شمارہ 132 مارچ تا مئی 1984

    کسی تاریک گوشے میں بسر ہوگی ہماری

    محل میں تجھ کو پل پل کی خبر ہوگی ہماری

    عجب اک سحر ہوگا جان دینی بے بسی میں

    فرشتوں کی تسلی چارہ گر ہوگی ہماری

    شعاعوں کی سواری نور کی رفتار ہوگی

    مگر اک خاک زادی ہم سفر ہوگی ہماری

    جہانوں کے سفر ہیں اور ستاروں سے سند ہے

    غزل میں ہر روایت معتبر ہوگی ہماری

    چھپے ہوں گے زمیں تا آسماں اس میں طلسمات

    بظاہر گو حکایت مختصر ہوگی ہماری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY