کتنے بھی غم زدہ ہوں مگر مسکرائیں گے

واصف یار

کتنے بھی غم زدہ ہوں مگر مسکرائیں گے

واصف یار

MORE BYواصف یار

    کتنے بھی غم زدہ ہوں مگر مسکرائیں گے

    وعدہ جو کر لیا ہے کہ آنسو نہ آئیں گے

    وہ ہیں وہاں جہاں سے پلٹنا محال ہے

    پھر بھی یہ لگ رہا ہے کہ وہ لوٹ آئیں گے

    کتنے دنوں کے بعد ہمیں نیند آئی ہے

    آہستہ بات کیجیے ہم جاگ جائیں گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY