کوئی چارا نہیں دعا کے سوا

حفیظ جالندھری

کوئی چارا نہیں دعا کے سوا

حفیظ جالندھری

MORE BYحفیظ جالندھری

    کوئی چارہ نہیں دعا کے سوا

    کوئی سنتا نہیں خدا کے سوا

    مجھ سے کیا ہو سکا وفا کے سوا

    مجھ کو ملتا بھی کیا سزا کے سوا

    برسر ساحل مراد یہاں

    کوئی ابھرا ہے ناخدا کے سوا

    کوئی بھی تو دکھاؤ منزل پر

    جس کو دیکھا ہو رہ نما کے سوا

    دل سبھی کچھ زبان پر لایا

    اک فقط عرض مدعا کے سوا

    کوئی راضی نہ رہ سکا مجھ سے

    میرے اللہ تری رضا کے سوا

    بت کدے سے چلے ہو کعبے کو

    کیا ملے گا تمہیں خدا کے سوا

    دوستوں کے یہ مخلصانہ تیر

    کچھ نہیں میری ہی خطا کے سوا

    مہر و مہ سے بلند ہو کر بھی

    نظر آیا نہ کچھ خلا کے سوا

    اے حفیظؔ آہ آہ پر آخر

    کیا کہیں دوست واہ وا کے سوا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    پنکج اداس

    پنکج اداس

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY